Best Poem of Obaidullah Aleem

Main Ki Kiya Kaam
میں نے کیا کام لاجواب کیا
اُس کو عالم میں انتخاب کیا

کرم اُس کے ستم سے بڑھ کر تھے
آج جب بیٹھ کر حساب کیا

کیسے موتی چھپائے آنکھوں میں
ہائے کس فن کا اِکتساب کیا

کیسی مجبوریاں نصیب میں تھیں
زندگی کی کہ اِک عذاب کیا

ساتھ جب گردِ کُوئے یار رہی
ہر سفر ہم نے کامیاب کیا

کچھ ہمارے لکھے گئے قِصّے
بارے کچھ داخلِ نصاب کیا

کیا عبید اب اُسے میں دوں اِلزام
اپنا خانہ تو خود خراب کیا
. . .
Read the full of Main Ki Kiya Kaam
Kuch din to baso meri ankhon main
kuch din to baso meri ankhon main
phir khwab agar ho jao to kya

koi rang to do mere chehre ko
phir zakhm agar mahkao to kya

ik aina tha so tut gaya
ab khud se agar sharmao to kya

main tanha tha main tanha hun
tum ao to kya na ao to kya

jab ham hi na mahak phir sahib
Read the full of Kuch din to baso meri ankhon main